.

شاہ سلمان نے خود کو فلسطینی سفیر کب قرار دیا؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں متعین فلسطینی سفیر باسم عبداللہ الآغا نے کہا ہے کہ وہ فلسطین سے متعلق خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کے 2 تاریخی واقعات کبھی فراموش نہیں کر سکتے۔

ان دونوں واقعات سے فلسطین اور اس کے عوام سے ان کی گہری محبت اور وابستگی کا پتہ چلتا ہے۔ باسم الآغا نے بتایا کہ پہلا واقعہ اس وقت پیش آیا جب خادم الحرمین الشریفین پاکستان کے دورے پر تھے۔ فلسطینی سفیر نے انہیں اس موقع پر سلام کیا تو خادم الحرمین الشریفین نے انہیں گلے لگاتے ہوئے کہا کہ فلسطین اور القدس ہمارے دلوں میں ہے۔ فلسطین جلد آزاد ہو گا-

دوسرا واقعہ الجزائر کے دورے کے موقع پر پیش آیا اس وقت شاہ سلمان ریاض کے گورنر ہوا کرتے تھے۔ وہ الجزائر میں سعودی سفارتخانے کے افتتاح کیلئے پہنچے ہوئے تھے۔ فلسطینی سفیر نے اس موقع پر اپنا تعارف کرانا چاہا تو خادم الحرمين الشريفين نے جواباً کہا ’’شہزادہ (اس وقت) سلمان مملکت میں فلسطین کا سفیر‘‘ آپ کے سامنے ہے۔