.

نہم میں یمنی فوج کا حوثیوں پر غیر متوقع حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں زمینی ذرائع نے بتایا ہے کہ دارالحکومت صنعاء کے مشرق میں واقع نہم گورنری کے متعد محاذوں پر یمنی سرکاری فوج اور حوثی ملیشیا کے درمیان شدید معرکے ہوئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق یمنی فوج نے نہم میں حوثی ملیشیا کے بقیہ ٹھکانوں پر شدید گولہ باری کے ساتھ غیر متوقع اور بڑا حملہ کیا۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ ارحب ، ہمدان اور عیال سریح کے علاقوں میں دھماکوں کی آوازیں سنی گئیں۔

اس حملے میں یمنی فوج کو عرب اتحادی طیاروں کی معاونت حاصل رہی جنہوں نے نہم گورنری کے مختلف علاقوں میں حوثیوں کے ٹھکانوں اور کُمک پر بم باری کی۔

ادھر یمنی فوج کو شبوہ صوبے کے علاقے بیحان میں چ ہوئی ہیں جن کو معلومات کا خزانہ قرار دیا جا رہا ہے۔

مذکورہ دستاویزات سے شبوہ اور دیگر صوبوں میں بارودی سرنگوں ، نشانچیوں اور باغی ملیشیا کے عناصر کی موجودگی کے مقامات ظاہر ہوتے ہیں۔

یمنی فوج کا کہنا ہے کہ حاصل شدہ معلومات لڑائی کی حکمت عملی اور رُوٹ کو تبدیل کردیں گی۔