.

جب نیوز اینکر کو خود اپنے بھائی کے قتل کی خبر پڑھنا پڑ جائے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں ٹی وی کے ایک نیوز اینکر محمد الضبیانی نے بُلیٹن کے دوران دوسری مرتبہ اپنے کسی سگے بھائی کے قتل کی خبر پڑھی۔ حوثی ملیشیا نے ناصر اور دیگر مغوی یمنیوں کو صنعاء میں پولیس ہیڈ کوارٹر میں بطور انسانی ڈھال استعمال کیا۔

محمد الضبیانی نے ہوا کے دوش پر اپنی بھائی کی وفات کی خبر پڑھی تو اُس کی آواز غم کے سبب گُھٹی ہوئی تھی اور اس میں کرب اور الم نمایاں تھا۔

یاد رہے کہ اس سے قبل 2015 میں بھی محمد الضبیانی نے اپنے ایک بھائی احمد کے جاں بحق ہونے کی خبر ہوا کے دوش پر پڑھی تھی۔ احمد یمنی عوامی مزاحمت کاروں کی صفوں میں شریک تھا اور مارب صوبے میں حوثی ملیشیا کے ہاتھوں قتل کر دیا گیا تھا۔

یمنی وزیراعظم ڈاکٹر احمد عبید بن دغر نے نیوز اینکر محمد الضبیانی اور آل الضبیانی خاندان کے نام تعزیتی پیغام ارسال کیا۔

وزیراعظم نے اپنے پیغام میں متاثرہ خاندان کے لیے گہری تعزیت کا اظہار کیا جو اپنے دو سُپوتوں کو باغیوں کے ہاتھوں قربان کر چکا ہے۔