.

سفارت خانوں کی بیت المقدس منتقلی ، اسرائیل کے 10 ممالک سے رابطے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی نائب وزیر خارجہ زیپی ہوتوفلی کا کہنا ہے کہ واشنگٹن کی جانب سے بیت المقدس کو دارالحکومت تسلیم کر لینے کے بعد اسرائیل اس وقت کم از کم دس ممالک کے ساتھ رابطے میں ہے تا کہ وہ اپنے سفارت خانوں کو بیت المقدس منتقل کر لیں۔

ہوتوفلی نے پیر کے روز اسرائیلی ریڈیو کو مزید بتایا کہ ان دس ممالک میں بعض یورپی ممالک بھی شامل ہیں۔

ہوتوفلی کا یہ بیان اتوار کے روز گوئٹے مالا کے صدر کی جانب سے اپنے سفارت خانے کو بیت المقدس منتقل کرنے کے اعلان کے بعد سامنے آیا ہے۔

اسرائیلی عہدے دار نے مذکورہ ممالک کا نام نہیں بتایا۔

اسرائیلی جنرل ریڈیو نے اسرائیلی سفارتی ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ جو ممالک اس اقدام کی جانب بڑھ سکتے ہیں ان میں فلپائن ، رومانیہ ، جنوبی سوڈان اور ہونڈوراس شامل ہیں۔ تاہم یہ بات بھی واضح کی گئی ہے کہ یہ امر فی الحال رابطوں تک محدود ہے اور سفارت خانوں کو جلد بیت المقدس منتقل کرنے کے لیے کوئی نمایاں مذاکرات نہیں ہو رہے۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ رواں ماہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کر چکے ہیں۔