.

یمن میں ایرانی پروگرام کو ختم کرنا اٹل فیصلہ ہے:صدر ھادی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے صدر عبد ربہ منصور ھادی نے کہا ہے کہ ان کی حکومت اور عوام نے ملک میں حوثی باغیوں کے ذریعے مسلط کیےگئے ایرانی پروگرام کو ختم کرنے کا تہیہ کر رکھا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ حوثیوں کو کچلنا اور ایرانی پروگرام کو نیست ونابود کرنا ان کا اٹل فیصلہ ہے۔ اس مقصد کے لیے پوری قوم اور تمام یمنی طبقات ان کے ساتھ کھڑے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ایک بیان میں صدر عبد ربہ منصور ھادی نے حوثی ایران نواز ملیشیا پر ملک میں مذہبی جنگ چھیڑنے اور پورے خطے کی سلامتی اور استحکام کو داؤ پر لگانے کا الزام عاید کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ حوثی باغی غیرملکی ایجنڈے پر عمل کرتےہوئے یمن کو تباہ کررہے ہیں، انہوں نے ملک میں مذہبی اور نسلی جنگ چھیڑ رکھی ہے۔

صدر عبد ربہ منصورھادی نے فوج اور مزاحمتی ملیشیا کی یمن کے مختلف محاذوں پر ہونے والی حالیہ کامیابیوں پر پوری قوم کو مبارک باد پیش کی ہے۔ صدر نے یمنی فوج کے سینیر عہدیداروں بریگیڈ سات کے کمانڈر میجر جنرل ناصر الذیبانی اور صنعاء کے گورنر عبدالقوی شریف سے ٹیلیفون پر بات چیت کی اور فوج کی حالیہ پیش رفت اور باغیوں کی کئی محاذوں پر شکست پر انہیں مبارک باد پیش کی۔ صدر نے ملک میں امن وامان کی بحالی اور غیرملکی ایجنڈے کے تحت لڑنے والوں کا مقابلہ کرتے ہوئے جان کی بازی ہارنے والوں کوخراج عقید پیش کیا۔

انہوں نےیمن کے چپے چپے کو باغیوں کےقبضے سے چھڑانے کا عزم ظاہر کرتے ہوئے یمن میں آئینی حکومت کی رٹ کی بحالی کے لیے سعودی عرب کی قیادت میں جاری آپریشن کی تحسین کی۔