.

قطر میں انقلاب سے متعلّق شائع رپورٹ بے بنیاد ہے : سعودی سفارت خانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

انقرہ میں سعودی سفارت خانے نے تُرک جریدے Yeni Şafak میں شائع ہونے والی اُس رپورٹ کو مملکت کے خلاف باطل پروپیگنڈہ قرار دیا ہے جس میں دعوی کیا گیا کہ ترکی نے رواں سال قطر میں انقلاب کی کوشش کو ناکام بنا دیا تھا۔

جمعے کے روز سفارت خانے کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ 25 دسمبر کو جریدے نے کالم نگار محمد آجت کا ایک مضمون شائع کیا ، اس مضمون میں یہ دعوی کیا گیا کہ سعودی عرب نے جون میں قطر سے اپنے تعلقات منقطع کرنے کے اعلان سے قبل قطر میں انقلاب کی منصوبہ بندی کی کوشش کی۔

بیان میں زور دے کر کہا گیا ہے کہ جریدے کے مضمون میں جو کچھ شائع کیا گیا وہ بے بنیاد دعوؤں کے سوا کچھ نہیں۔

سعودی سفارت خانے نے اس نوعیت کے پروپیگنڈوں میں مملکت کا نام ملوّث کرنے کی پُرزور مذمت کی۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ "رپورٹ میں جس ملک کے بارے میں کہا گیا ہے کہ ترکی نے اس کا دفاع کیا ، اس ملک نے خود رپورٹ کی تردید کر دی ہے"۔

سعودی سفارت خانے نے تُرک میڈیا پر زور دیا کہ وہ مواد کو نشر کرنے سے قبل اس کی درستی اور صداقت کی اچھی طرح چھان بین کیا کریں۔