.

دمشق کے قریب اسدی فوج اور اپوزیشن کے درمیان گھمسان کی جنگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام کے دارالحکومت دمشق کے قریب بشار الاسد کی وفادار فوج اور اپوزیشن فورسز کے درمیان شدید جھڑپوں کی اطلاعات ہیں۔ شامی فوج کے جنگی طیاروں کی جانب سے شامی باغیوں کے مراکز پر کم سے کم 12 فضائی حملے کیے ہیں۔

انسانی حقوق پر نظر رکھنے والے ادارے ’آبزرویٹری‘ اور شام کے انسانی حقوق کارکن مازن الشامی کا کہناہے کہ تازہ لڑائی دمشق کے مشرقی علاقے حرستا میں شروع ہوئی۔ دونوں جانب سے ایک دوسرے پر بھرپور حملے کیے جا رہےہیں۔ اسدی فوج نے سوموار کے روز حرستا کے علاقے کا محاصرہ بھی کیا تھا تاہم بعد ازاں محاصرہ ختم کردیا گیا۔

آبزرویٹری کے مطابق حرستا اور اس کے اطراف میں اسدی فوج نے 12 فضائی حملے کیے ہیں جب کہ الشامی کا کہنا ہے کہ شام کی سرکاری فوج نے دسیوں فضائی اور زمینی حملے کیے ہیں۔ گذشتہ شب اسدی فوج نے حرستا کی طرف مزید کمک بھی ارسال کی تھی۔

شامی آبزر ویٹری کے مطابق گذشتہ تین روز کے دوران مشرقی الغوطہ میں بمباری کے دوران 35 عام شہری، 24 شامی فوجی اور 29 اپوزیشن کے کارکن ہلاک ہوگئے ہیں۔