.

ایرانی عوام سرکاری بینکوں سے اپنی رُقوم نکال لیں : شيريں عبادی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

معروف ایرانی نوبل انعام یافتہ خاتون شیریں عبادی نے ایرانی عوام پر زور دیا ہے کہ وہ احتجاج کا سلسلہ جاری رکھیں اور سول نافرمانی کا آغاز کریں۔

عربی روزنامے "الشرق الاوسط" کے مطابق مشہور قانون داں اور انسانی حقوق کی ترجمان عبادی کا کہنا ہے کہ ایرانیوں کو چاہیّے کہ وہ سڑکوں پر رہیں اور آئین انہیوں احتجاج کا حق دیتا ہے۔

عبادی نے ایرانیوں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ پانی، گیس اور بجلی کے بلوں کے علاوہ ٹیکسوں کی ادائیگی روک دیں۔ اس کے ساتھ سرکاری بینکوں سے اپنی مالی رقوم نکال لیں تا کہ حکومت پر اقتصادی طور پر دباؤ پڑے اور تشدد سے ہاتھ کھینچ کر عوام کے مطالبات پر کان دھرے۔

عبادی نے الشرق الاوسط کو دیے گئے انٹرویو میں کہا کہ "اگر حکومت نے 38 برس آپ لوگوں کی بات نہیں سنی تو اب آپ کی باری ہے کہ جو کچھ حکومت کہہ رہی ہے اسے نظر انداز کر دیں"۔

شیریں عبادی نے 2003 میں امن کا نوبل انعام اپنے نام کیا تھا۔ وہ ایرانی حکام پر تنقید کرنے والی اُن متعدد شخصیات میں سے ہیں جو بیرون ملک مقیم ہیں۔

ایران میں جاری عوامی احتجاجی مظاہروں کا آج آٹھواں روز ہے۔