.

امارات اور تیونس کے درمیان ہوابازی کا تنازع ختم، پروازیں دوبارہ شروع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات میں خارجہ امور اور بین الاقوامی تعاون کی وزارت نے اعلان کیا ہے کہ "امارات میں متعلقہ حکام نے ہوابازی کے شعبے میں برادر ملک تیونس کے ساتھ تعلق کو معمول پر لانے کا فیصلہ کیا ہے جس کا مقصد فضائی جہاز رانی کی سلامتی کو یقینی بنانا ہے۔ اس سلسلے میں تیونس کی جانب سے سکیورٹی تعاون اور معلومات کے تبادلے کا سلسلہ جاری رہے گا"۔

بیان کے مطابق خارجہ امور اور بین الاقوامی تعاون کی وزارت امارات اور تیونس کے درمیان قریبی تعلق کے سلسلے میں مشترکہ تعاون کی اہمیت کو بخوبی جانتی ہے۔ اس واسطے وہ تیونس کی جانب سے فراہم کردہ معلومات کو گراں قدر شمار کرتی ہے۔ تیونس واضح طور پر امارات کی قومی فضائی کمپنیوں کی تشویش کے تمام اسباب دُور کرنا چاہتا ہے۔ یہ امر فضائی پروازوں اور مسافروں کے امن اور سلامتی کے اعلی درجوں کو یقینی بناتا ہے۔

یاد رہے کہ متحدہ عرب امارات کی جانب سے فضائی سفر کے سلسلے میں تیونسی خواتین کے خلاف متنازع سکیورٹی اقدامات کے بعد دسمبر کے آخری ہفتے میں تیونس کے لیے پروازوں کی آمد و رفت معطل کر دی گئی تھی۔