.

سعودی کمپنی ’ارامکو‘ کا سرکاری اسٹیٹس شیئرہولڈنگ کمپنی میں تبدیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی حکومت نے مملکت کی سب سے بڑی آئل کمپنی ’ارامکو‘ کے ڈھانچے میں تبدیلی کے ساتھ ساتھ اس کے کچھ شیئر پرائیویٹائز کرنے کا ایک سنجیدہ قدم اٹھایا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب کے سرکاری گزٹ[جریدہ ام القریٰ] میں بتایا گیا ہے کہ کمپنی کے 60 ارب ریال کے منافع کی مکمل ادائیگی کی جا چکی ہے۔ کمپنی کے 2 کھرب ریال عمومی حصص مساوی ووٹنگ رائٹس غیرنامزد قدر کے تقسیم کیے گئے ہیں۔

ارامکو کے حوالے سے حکومت کی تبدیلی کی ابتدائی معلومات کے مطابق کمپنی کو 11 رکنی ایک انتظامی کونسل چلائے گی۔ اس کونسل کی مدت تین سال ہو گی جس کے بعد نئی کونسل عمل میں لائی جائے گی۔

انتظامی کونسل کے چھ ارکان کا انتخاب براہ راست حکومت کرے گی۔ کسی دوسرے شیئر ہولڈر کا غیر سرکاری ہولڈنگ گروپ کی ملکیت میں زیادہ سے زیادہ 0.1 فی صد شیئر ہوں گے۔ کونسل کے پاس کمپنی کو علاقائی اورعالمی مارکیٹوں میں شمولیت کا اختیار ہو گا۔

سال 2018ء سے ارامکو اپنے 5 فی صد حصص فروخت کرے گی۔ ارامکو کے بعض حصص فروخت کرنے کا فیصلہ ولی عہد کے اقتصادی ویژن 2030ء کا حصہ ہے۔ آئل کمپنی کے ڈھانچے میں تبدیلی کے باوجود تیل کی قومی پیدوار سے متعلق فیصلے کا اختیار حکومت کے پاس ہو گا اور حکومت ہی کمپنی کا مرکزی شیئر ہولڈر ہو گی۔