.

الجوف صوبے کی مکمل آزادی قریب آ چکی ہے : یمنی فوج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں سرکاری فوج کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل عبدہ مجلی نے باور کرایا ہے کہ یمنی فوج نے عوامی مزاحمت کاروں اور اتحادی طیاروں کی معاونت سے الجوف صوبے میں اہم اور فیصلہ کن کامیابیاں حاصل کی ہیں۔ ان میں نمایاں ترین فتح صوبے کی گورنری "خب و الشعف" کی آزادی ہے جو صوبے کے کُل رقبے کا 75% ہے۔

ترجمان نے مزید بتایا کہ الجوف صوبے میں حالیہ گھمسان کی لڑائی کے بعد باغی ملیشیا ڈھیر ہونے کی حالت میں ہے جس کو بھاری جانی اور مادی نقصان کا سامنا کرنا پڑا۔

مجلی کے مطابق کامیابی قریب آ چکی ہے اور الجوف اور باغیوں کے زیر قبضہ دیگر صوبوں کو جلد آزاد کرا لیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ یمنی فوج الثلوث کے بازار کی جانب پیش قدمی کر رہی ہے۔ اس کی آزادی کے ساتھ ہی خب و الشعف گورنری مکمل طور پر آزاد ہو جائے گی۔

ترجمان کا مزید کہنا ہے کہ باغی ملیشیا کی جانب سے ہزاروں بارودی سرنگیں اور دھماکا خیز مواد نصب کرنے کے باوجود یمنی فوج حوثی ملیشیا کو ہزیمت سے دوچار کرنے اور لڑائی کے مختلف محاذوں پر کامیابیاں حاصل کرنے میں کامیاب ہو گئی۔