.

صنعاء میں حوثیوں کے بریگیڈیئر کو گولی مار دی گئی

حوثی لیڈروں میں اختیارات کے لیے کشمش میں اضافہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے دارالحکومت صنعاء میں گھات لگا کرحملہ کرنے والا ایک گروپ خفیہ طور پر سرگرم ہے جو حوثی باغیوں کو نشانہ بنا رہا ہے۔ حالیہ ایام میں حوثیوں کی طرف سے یہ دعویٰ کیا گیا ہے کہ نامعلوم نشانہ بازوں نے کئی اہم شخصیات پر فائرنگ کی ہے۔ گذشتہ روز صنعاء میں اسی طرح کے ایک واقعے میں حوثیوں کے ایک اہم سیکیورٹٰی اہلکار کو نامعلوم افراد نے گولیاں مار کر قتل کردیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق حوثیوں کا کہنا ہے کہ ان کی قائم کردہ مرکزی وار کونسل کے رکن بریگیڈیئر علی الغراسی کو دارالحکومت صنعاء میں عصر کے مقام پر واقع ان کی رہائش گاہ کے اندر نامعلوم افراد نے گولیاں مار کر قتل کردیا۔

خیال رہے کہ حالیہ ایام میں حوثی باغیوں اور ماضی میں ان کے اتحادی پیپلز کانگریس کے درمیان بھی شدید اختلافات پیدا ہوئے ہیں۔ ان اختلافات کے بعد دونوں گروپ ایک دوسرے کے خلاف مسلح کارروائیاں بھی کررہے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ حوثیوں کو شبہ ہے کہ اس کے اہم عہدیداروں کے خلاف سرگرم خفیہ گروپ کا تعلق مقتول سابق صدر علی عبداللہ صالح کےوفاداروں کے ساتھ ہو سکتا ہے۔

ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ حوثیوں کے اندر بھی اہم عہدوں کے حصول کے لیے کشمکش جاری ہے۔ حوثی لیڈر عبدالمللک الحوثی کے چچا عبدالکریم الحوثی اور ملیشیا کے فیلڈ کمانڈر ابو علی الحاکم کے درمیان بھی کھینچا تانی جاری ہے۔