.

سعودی عرب:خواتین پہلی بار کھیل کے میدانوں میں داخل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں مملکت کی تاریخ میں پہلی بار خواتین کو کھیل کے میدانوں میں براہ راست میچ دیکھنے کی اجازت دی گئی ہے اور اس اجازت کے تحت کل جمعہ کو سعودی فٹ بال لیگ کے 17 ویں راؤنڈ کے موقع پر خواتین کی بڑی تعداد اسٹیڈیم پہنچیں۔

قبل ازیں ایران کی اسپورٹس اتھارٹہ نے ایک بیان میں کہا تھا کہ جدہ، الریاض اور الدمام کے فٹ بال اسٹیدیم میں جمعہ سے خواتین کو براہ راست میچ دیکھنے کے کا موقع دیا جا رہا ہے۔ اس سلسلے میں تمام ضروری اقدامات مکمل کرلیے گئے ہیں۔

سعودی عرب میں الاہلی فٹبال کلب نے اُن سعودی خاندانوں کا خیر مقدم کیا ہے جو الباطن کی ٹیم کے خلاف اُس کا آئندہ میچ دیکھنے کے لیے اسٹیڈیم آنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ یہ میچ 12 جنوری بروز جمعہ جدہ میں کنگ عبداللہ اسپورٹس سِٹی کے الجوہرہ اسٹیڈیم میں کھیلا جائے گا۔

الاہلی کلب نے اپنے سرکاری اکاؤنٹ پر کی جانے والی ٹوئیٹ میں کہا ہے کہ کلب انتظامیہ الباطن کی ٹیم کے خلاف مقابلے میں تماشائیوں کی اپنے اہل خانہ سمیت موجودگی کا خیر مقدم کرتی ہے جو سعودی عرب میں کھیلوں کے میدانوں میں اہل خانہ سمیت شرکت کا پہلا موقع ہو گا"

یاد رہے کہ گزشتہ برس 29 اکتوبر کو سعودی اسپورٹس جنرل اتھارٹی نے مملکت میں کھیلوں کے میدانوں میں اہل خانہ کے ساتھ داخلے کی اجازت دینے کا اعلان کیا تھا۔ ابتدائی طور پر اس تاریخی نوعیت کے فیصلے کا اطلاق تین شہروں ریاض ، جدہ اور دمّام میں ہوگا۔

الاہلی کلب کے آئندہ میچ کے لیے الجوہرہ اسٹیڈیم میں سعودی خاندانوں کے استقبال کی تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں۔ معلومات کے مطابق اسٹیڈیم کی 10 ہزار نشستوں کو اہل خانہ کے ساتھ محظوظ ہونے والے تماشائیوں کے لیے مختص کیا گیا ہے۔