.

قطر کی جارحیت کے پیچھے بوکھلاہٹ چُھپی ہوئی ہے : قرقاش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کے وزیر مملکت برائے خارجہ امور انور قرقاش کا کہنا ہے کہ حالیہ دنوں میں قطر کی جانب سے سامنے آنے والی جارحیت کی بنیاد دوحہ کی تشویش اور بوکھلاہٹ ہے۔ انہوں نے اس جارحانہ رجحان کو ایک بوگس کوشش قرار دیا جس کے پیچھے کمزور ہو جانے کا خوف کار فرما ہے۔

انٹرنیٹ پر اپنی ٹوئیٹ میں قرقاش نے واضح کیا کہ "ہمارا جواب متوازن اور قانونی نوعیت کا ہو گا جس کا مقصد فضاؤں اور مسافروں کی جانوں کو امان دینا ہے"۔

دوسری جانب اقوام متحدہ میں امارات کے مستقل مشن کو متحدہ عرب امارات کا جواب موصول ہو گیا ہے۔ یہ جواب سلامتی کونسل کو پیش کی جانے والی یادداشت میں قطر کے اُس دعوے کو بے بنیاد ثابت کر دے گا جس میں کہا گیا کہ ایک اماراتی فوجی طیارے نے قطر کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی ہے۔

امارات کی سول ایوی ایشن جنرل اتھارٹی نے پیر کے روز بتایا تھا کہ قطری لڑاکا طیاروں نے دو مختلف واقعات میں امارات کے دو مسافر طیاروں کے سفر میں رخنہ ڈالنے کی کوشش کی۔ دونوں پروازیں تمام تر متعلقہ بین الاقوامی شرائط پوری کرنے کے ساتھ معمول کے راستوں پر گامزن تھیں۔

اتھارٹی کے سربراہ کے مطابق قطر کے لڑاکا طیاروں کی جانب سے اس اقدام نے دونوں طیاروں اور ان کے مسافروں کی جانوں کو خطرے میں ڈال دیا۔ انہوں نے واضح کیا کہ قطر نے فضائی حدود کے استعمال کے حوالے سے کسی قسم کا کوئی انتباہ جاری نہیں کیا اور اس بات کے شواہد موجود ہیں کہ قطر کے لڑاکا طیاروں کی جانب سے دانستہ طور پر ایسا کیا گیا۔