.

صعدہ میں ایک ہفتے کے دوران 100 حوثی ہلاک، 34 گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کی سرکاری فوج کی جانب سے جاری کردہ ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ایران نواز حوثی باغیوں کے گڑھ سمجھے جانے والی صعدہ گورنری میں گذشتہ ایک ہفتے کے دوران باغیوں کو بھاری جانی اور مالی نقصان اٹھانا پڑا ہے۔ رپورٹ کے مطابق ایک ہفتے میں صعدہ میں کتاف البقع اور دیگر مقامات پر جاری رہنے والی لڑائی میں 100 حوثی باغی ہلاک اور 34 کو گرفتار کرلیا گیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق یمن فوج کی جانب سے جاری کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ صعدہ میں ہلاک ہونے والے باغیوں میں 4 اہم فیلڈ کمانڈر بھی شامل ہیں۔ ان میں سے تین کی لاشیں سرکاری فوج نے قبضے میں لے لیں۔ لڑائی کے دوران سیکڑوں کی تعداد میں باغی زخمی بھی ہوئےہیں۔

حکام کا کہنا ہے صعدہ میں باغی اپنے تین فیلڈ کمانڈروں محمد حسن عوفان، صالح محمد سعد الرباعی اور صلاح الدین محمد ناصر سیلان کی لاشیں چھوڑ کر فرار ہوگئے۔ یہ تینوں کماندر کتاف البقع کے محاذ پر ہلاک ہوئے۔

یمنی فوج کی سرکاری ویب سائیٹ کے مطابق کل جمعہ کے روز حوثی باغیوں اور حکومتی فورسز کےدرمیان کئی مقامات پر جھڑپیں جاری رہیں۔ گذشتہ ایک ہفتے میں صعدہ میں 100 جنگجو ہلاک، 34 گرفتار اور سیکڑوں زخمی ہوئے۔ 10 فوجی گاڑیاں تباہ کی گئیں اور بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود قبضے میں لیا گیا۔