.

مصر : عبدالفتاح السیسی نے صدارتی انتخاب کے لیے کاغذات نامزدگی جمع کرادیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے صدر عبدالفتاح السیسی نے آیندہ صدارتی انتخابات میں بطور امیدوار حصہ لینے کے لیے الیکشن کمیشن کو باضابطہ طو ر پر کاغذات نامزدگی جمع کرا دیے ہیں۔

صدر السیسی کی جانب سے بدھ کے روز ان کے ایک نمایندے نے کاغذات نامزدگی جمع کرائے ہیں۔ وہ 26 سے 28 مارچ تک ہونے والے صدارتی انتخابات میں حصہ لینے کے لیے اندراج کرانے والے پہلے امیدوار ہیں۔

مصری فوج نے ایک روز قبل ہی ان کے ایک ممکنہ حریف صدارتی امیدوار سابق چیف آف اسٹاف ریٹائرڈ جنرل سامی عنان کو جعل سازی اور فوجی قواعد وضوابط کی خلاف ورزی کے الزام میں گرفتار کر لیا ہے۔

یادرہے کہ 2014ء میں منعقدہ صدارتی انتخابات میں مسلح افواج کے سابق سربراہ عبدالفتاح السیسی 96.9 فی صد ووٹ لے کر ملک کے صدر منتخب ہوگئے تھے ۔ان کے حریف امیدوار حمدین صباحی کے حق میں صرف تین فی صد ووٹ پڑے تھے جبکہ باقی ووٹوں کو مسترد کردیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ عبدالفتاح السیسی کو مصر کے پہلے منتخب صدر ڈاکٹر محمد مرسی نے آرمی چیف کے منصب پر فائز کیا تھا لیکن انھوں نے جولائی 2013ء میں عوامی احتجاجی مظاہروں کے بعد ڈاکٹر مرسی ہی کو چلتا کیا تھا اور بعد میں ان کی جماعت اخوان المسلمون کو دہشت گرد قرار دے کر اس پر پابندی لگا دی تھی۔

گذشتہ پانچ برس کے دوران میں ملک کی اس سب سے بڑی اور منظم جماعت کے خلاف السیسی حکومت نے سخت کریک ڈاؤن کیا ہے اورا س کے نتیجے میں اس کے دوہزار سے زیادہ کارکنان مارے گئے تھے اور ہزاروں کو گرفتار کرکے جیلوں میں ڈال دیا گیا تھا۔ اخوان اور اس کی ہم نوا مذہبی سیاسی جماعتوں نے گذشتہ صدارتی انتخابات کا بائیکاٹ کیا تھا۔