.

یمن : مغربی ساحل کے محاذ سے درجنوں حوثی فرار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں مغربی ساحل کے محاذوں پر عرب اتحاد کی معاونت سے سرکاری فوج کی پیش قدمی کے نتیجے میں درجنوں مسلح حوثی اپنے ٹھکانوں سے فرار ہو گئے ہیں۔

یمن کے مغربی صوبے ریمہ میں ایک مقامی ذریعے نے بتایا ہے کہ یمنی فوج کی تیز پیش قدمی کے بعد صوبے سے تعلق رکھنے والے درجنوں افراد جن کو باغی ملیشیا کی صفوں میں بھرتی کیا گیا تھا، اپنے ٹھکانوں سے بھاگ کر گھروں کو لوٹ آئے۔

ذریعے نے اس امر کی تصدیق کی کہ "حوثی ملیشیا نے کم عمر بچوں کو پُھسلانے پر کام کیا اور انہیں مغربی ساحل کے محاذوں پر جھونک دیا۔ ہلاک شدگان میں درجنوں ایسے بچّے تھے جن کی عمر 12 برس سے زیادہ نہ تھی"۔

مذکورہ ذریعے کے مطابق لڑائی کے محاذوں میں جھونکے گئے درجنوں افراد لاپتہ ہیں اور ان کے اہل خانہ باغی ملیشیا سے مطالبہ کر رہے ہیں کہ ان کی اولاد کے انجام کے بارے میں وضاحت دیں۔

یمنی ذرائع کا کہنا ہے کہ حوثی ملیشیا نے بچوں کو جبری طور پر بھرتی کیا، انہیں اسکولوں سے اغوا کیا اور پھر محاذوں پر پے در پے جانی نقصان کے بعد ان بچوں کو لڑائی میں جھونک دیا۔