.

جزیرہ نماء میں مصری فوج کے جامع آپریشن کے ابتدائی مناظر

دہشت گردوں کی بری اور بحری ناکہ بندی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے سرکاری ذرائع ابلاغ نے شورش زدہ جزیرہ نما سیناء میں دہشت گردوں کے خلاف جامع آپریشن کے ابتدائی مناظر جاری کئے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مصر کے سرکاری ٹی وی پر جزیرہ سیناء میں دہشت گردوں کے خلاف جاری آپریشن کے مناظر دکھائے گئے ہیں۔ ان مناظر میں وسطی اور شمالی سیناء میں دہشت گردوں کے ٹھکانوں پر حملوں کے مناظر شامل ہیں۔ مصری فوج نے جزیرہ نما سیناء میں دہشت گردوں کو گھیرے میں لینے کے لیے بری اور بحری ناکہ بندی کر دی گئی ہے۔

خیال رہے کہ مصری فوج نے ’سیناء 2018‘ کے عنوان سے دہشت گردوں کے خلاف جامع آپریشن شروع کیا ہے۔

مصری فوج کے ترجمان تامرالرفاعی نے جمعہ کو ایک بیان میں بتایا کہ مصری فوج نے شمالی اور وسطی جزیرہ نما سیناء میں دہشت گرد عناصر اور جرائم پیشہ گروپوں کے خلاف حتمی اور فیصلہ کن کارروائی شروع کی ہے۔ آپریشن میں شمالی اور وسطی جزیرہ نما سیناء مصر ڈیلٹا، صحرائی پٹی اور مغربی وادی نیل میں بڑے پیمانے پر دہشت گردوں کے خلاف کارروائیاں شروع کی گئی ہیں۔

مصری فوج کے ترجمان کا کہنا ہے کہ تازہ آپریشن صدر جمہوریہ کی جانب سے مسلح افواج کو دہشت گردی کے مکمل خاتمے کے حوالے سے سونپی گئی ذمہ داری پر عمل درآمد کا حصہ ہے۔ صدر کی طرف سے ملک کو دہشت گردوں اور جرائم پیشہ عناصر کے خلاف فیصلہ کن کارروائی کرنے اور تمام ریاستی اداروں کی معاونت سے دہشت گردی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کے احکامات جاری کیے تھے۔

ترجمان نے مصری عوام سے پرزور اپیل کی ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جاری آپریشن میں فوج کے ساتھ تعاون کیا جائے۔ دہشت گردی کے خاتمے، ملک میں قانون کی عمل داری، امن استحکام اور انتہا پسندی کے خاتمے میں فوج کے ساتھ تعاون کیا جائے۔ دہشت گرد عناصر کی موجودگی کے بارے میں سیکیورٹی اداروں کو فوری طورپر آگاہ کریں۔

دہشت گردوں کے خلاف جزیرہ نما سیناء میں آپریشن میں بری فوج ، نیوی اور فضائیہ بھی حصہ لے رہے ہیں۔