.

روس شام میں جنگ بندی سے متعلق قرارداد کی حمایت پر تیار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روس نے آج جمعہ کے روز کہا ہے کہ وہ شام میں الغوطہ کے مقام پر جاری لڑائی روکنے کے لیے سویڈن اور کویت کی طرف سے سلامتی کونسل میں پیش کی جانے والی جنگ بندی کی قرارداد کی حمایت کرے گا۔

روسی خبرساں ادارے ’انٹرفیکس‘ نے روسی وزیرخارجہ سیرگی لافروف کا ایک بیان نقل کیا ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ سلامتی کونسل میں شام میں جنگ بندی کے مطالبے پر مبنی قرارداد کی حمایت کے لیے تیار ہیں۔

روسی وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ امریکا نے قرارداد پر روس کی طرف سے کی گئی تجاویز مسترد کر دی تھی۔ روس نے ترمیم میں تجویز پیش کی تھی کہ اپوزیشن جماعتیں بھی جنگ بندی کی قرارداد کا احترام کریں گی۔

قبل ازیں اقوام متحدہ کے شام کے لیے مندوب اسٹیفن دی میستورا نے روس پر زور دیا تھا کہ وہ شام میں محاصرہ زدہ علاقے میں وحشیانہ بمباری اور شہریوں کے قتل عام کی روک تھام کے لیےجنگ بندی کی قرارداد کی حمایت کرے۔

جمعہ کے روز یورپی یونین نے سخت لہجے میں شام میں جنگ بندی پر زور دیا ہے۔ مشرقی الغوطہ میں گذشتہ ایک ہفتے سے جاری قتل عام پر یورپی یونین نے شدید تشویش کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ الغوطہ میں نہتے شہریوں کا قتل عام فوری طورپر بند کیا جائے۔

خیال رہے کہ کویت اور سویڈن کی جانب سے مشترکہ طورپر ایک قرارداد آج سلامتی کونسل میں پیش کی جا رہی ہے جس میں شام میں لڑائی روکنے کے لیے لیے 30 دن کی عبوری جنگ بندی پر زور دیا گیا ہے۔