.

سلامتی کونسل : حوثیوں کے لیے ایرانی سپورٹ سے متعلق قرار داد پررائے شماری کل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانیہ ، امریکا اور فرانس کی جانب سے عالمی سلامتی کونسل میں پیش کی جانے والی قرار داد پر پیر کے روز رائے شماری متوقع ہے۔ قرار داد میں یمن میں حوثی جماعت کو بیلسٹک میزائلوں کے پہنچنے کا سلسلہ روکنے اور خلاف ورزیوں کے حوالے سے اقدام کی پاسداری میں ایران کی ناکامی پر اُس کی مذمت کی گئی ہے۔

سفارتی ذرائع کے مطابق یہ قرارداد "یمن میں بیلسٹک میزائلوں کے استعمال سے تعلق رکھنے والی کسی بھی سرگرمی" کے خلاف سلامتی کونسل کی پابندیوں کی اجازت دے گی۔

سلامتی کونسل کے موجود سربراہ منصور العتیبی نے صحافیوں کو بتایا کہ "ہم ابھی تک اس کے متن پر کام کر رہے ہیں، تاہم پیر کی صبح اس کو منظور کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں"۔

دوسری جانب روسی سفیر ویسلے نیبنزیا نے رواں ہفتے اعلان کیا تھا کہ وہ اس قرار داد کی مخالفت کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایران کی مذمت کی نہیں بلکہ یمن پر عائد پابندیوں کی نگرانی کرنے والے ماہرین کے کام کی تجدید کی جانی چاہیے۔

برطانیہ ، امریکا اور فرانس کی جانب سے مذکورہ قرار داد کا مسودہ 18 فروری کو پیش کیا گیا۔

سفارتی ذرائع کے مطابق یہ قرارداد "یمن میں بیلسٹک میزائلوں کے استعمال سے تعلق رکھنے والی کسی بھی سرگرمی" کے خلاف سلامتی کونسل کی پابندیوں کی اجازت دے گی۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ کئی ماہ سے اقوام متحدہ میں ایران کے احتساب کے لیے دباؤ ڈال رہی ہے۔