.

شام میں داعش کے ٹھکانوں پر امریکی اتحادیوں کے فضائی حملوں میں 25 شہری ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

شام کے مشرقی علاقے میں داعش کے جہادیوں کے آخری ٹھکانے پر فضائی حملوں میں سات بچوں سمیت پچیس شہری مارے گئے ہیں۔

برطانیہ میں قائم شامی رصدگاہ برائے انسانی حقوق نے سوموار کے روز ایک بیان میں بتایا ہے کہ عراق کی سرحد کے نزدیک داعش کے ایک سابق مضبوط گڑھ البوکمال کے شمال میں واقع ایک گاؤں آل شعافہ پر اور اس کے ارد گرد اتوار کو فضائی حملے کیے گئے تھے۔

رصدگاہ کے سربراہ رامی عبدالرحمان کا کہنا ہے کہ الشعافہ پر یہ فضائی حملے امریکا کی قیادت میں اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے کیے ہیں۔داعش کا شام کے مشرقی علاقے میں صرف اسی ایک گاؤں پر کنٹرول رہ گیا ہے۔

صوبہ دیر الزور کے دور دراز علاقوں میں امریکا کی قیادت میں اتحاد نے حالیہ ہفتوں کے دوران میں جہادیوں پر متعدد فضائی حملے کیے ہیں اور ان میں جنگجوؤں کے دسیوں رشتے دار مارے گئے تھے۔

امریکی اتحاد کے حمایت یافتہ کرد جنگجو دریائے فرات کے مشرقی کنارے سے داعش کے جنگجوؤں کے قلع قمع کی کوشش کررہے ہیں جبکہ فرات کے مغربی کنارے کے علاقے میں روس کی حمایت یافتہ شامی فوج اور ا س کی اتحادی فورسز موجود ہیں۔

امریکا کی قیادت میں اتحاد نے شام کے مشرقی صوبے دیر الزور کے دیہات میں داعش کے بچے کھچے جنگجوؤں کے خلاف حملے جاری رکھے ہوئے ہیں۔داعش سے وابستہ بعض چھوٹے گروپ شام کے دوسرے علاقوں میں ابھی تک متحرک ہیں۔