.

عراق : 25 لاکھ بے گھر افراد انتخابات میں شرکت سے محروم ہو سکتے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پناہ گزینوں سے متعلق اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر UNHCR نے عراقی حکومت پر زور دیا ہے کہ وہ ملک میں موجود بے گھر افراد کی تعداد کے اندراج کے اقدامات کو آسان بنائے۔ اس وقت عراق میں 25 لاکھ کے قریب ایسے بے گھر افراد ہیں جو ابھی تک اپنے گھروں کو نہیں لوٹ سکے ہیں۔ اس کے نتیجے میں داعش سے آزاد کرائے جانے والے شہروں میں آبادی کی ایک بڑی تعداد کے آئندہ قانون ساز انتخابات میں شرکت سے محروم ہو جانے کا اندیشہ ہے۔

عراق میں انتخابی کمیشن کے اعداد و شمار کے مطابق آزاد کرائے گئے شہروں میں انتخابی اندراج کی تجدید کرانے والے افراد کی تعداد بقیہ صوبوں کی نسبت بہت کم ہے۔ انبار صوبے میں یہ شرح 42 فی صد اور صلاح الدین صوبے میں 50 فی صد ہے۔

موصل میں بھی سکیورٹی وجوہات اور دیگر انتظامی اسباب کے باعث یہ تناسب 30 فی صد سے زیادہ نہیں۔ اس لیے کہ داعش تنظیم کے خلاف معرکہ آرائی کے دوران ہزاروں خاندان اپنے سرکاری دستاویزات کھو چکے ہیں۔

عراقی کابینہ کے سکریٹری جنرل مہدی العالق نے بے گھر افراد کی واپسی کو آسان بنانے اور آئندہ انتخابات میں ان کی شرکت کو یقینی بنانے کی اہمیت پر زور دیا ہے۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ بے گھر افراد کے انتخابی اندراج کے طریقہ کار کو آسان بنایا جائے۔