.

قابض اسرائیل نے دو فلسطینی وزیروں کو القدس داخلے سے روک دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

قابض اسرائیلی ریاست کی پولیس نے دو فلسطینی وزراء کو بیت المقدس میں داخل ہونے سے روک دیا۔

فلسطینی وزارت تعلیم کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ فلسطینی وزیر تعلیم صبری صیدم اور خاتون وزیر سیاحت رلی معایعہ پرانے بیت المقدس میں ایک اسکول کے دورے پر جا رہے تھے کہ اسرائیلی داخلی سلامتی کے وزیر نے انہیں القدس میں داخل ہونے سے روک دیا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ صہیونی حکومت کی طرف سے کسی وزیر کو القدس میں روکے جانے کا یہ پہلا موقع نہیں بلکہ وزیر چند روز کے دوران یہ اپنی نوعیت کا تیسرا واقعہ ہے۔

وزارت تعلیم کے ترجمان نے بتایا کہ وزیر تعلیم صبری صیدم اور خاتون وزیر سیاحت اپنی سرکاری ذمہ داریوں کی انجام دہی کے سلسلے میں القدس جا رہے تھے مگر قابض پولیس نے انہیں شہرمیں جانےسے روک دیا۔

ادھر اسرائیلی داخلی سلامتی کے وزیر گیلاد ارڈن کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ انہوں نے فلسطینی وزراء کو تراسنطا اسکول کے دورے پر جانے کی اجازت دینے سے روکا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ مشرقی بیت المقدس میں اسکولوں کے ڈائریکٹر سمیر جبریل اور کئی دوسرے فلسطینی عہدیداروں کو بھی القدس میں جانے سے روک دیا گیا۔