.

’سعودیہ جلد ہی ٹائٹینیم دھات سے جہازوں کے ڈھانچے تیار کرے گا‘

قومی صنعت میں 400 نئی ملازمتیں تخلیق کی جائیں گی: المرشید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی قومی صنعت کے چیف ایگزیکٹو مطلق المرشید نے کہا ہے کہ ان کا ملک ٹائیٹینم مواد سے عنقریب ہوائی جہازوں کے ڈھانچے تیار کرنے کا سلسلہ شروع کر رہا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آنے والے دنوں میں قومی صنعت میں سعودی شہریوں کے لیے مزید چار سو ملازمتیں تخلیق کی جائیں گی۔

مطلق المرشید نے ان خیالات کا اظہار سعودی عرب کے شہر الریاض میں جاری ’افد 2018‘ دفاعی نمائش کے موقع پر العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو میں کیا۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ سعودی عرب مینوفیکچرنگ کمپنی نے ’السلام ایو ایشن انڈسٹری‘ کمپنی اور فرانسیسی کمپنی ’ FIGEAC‘ کے ساتھ ٹائٹینیم دھات سے جہازوں کے ڈھانچے تیار کرنے کا معاہدہ کیا ہے۔

سعودی دفاعی آلات تیار کرنے والی کمپنی کے چیف ایگزیکٹیو کا کہنا تھا کہ مقامی سطح پر کمپنی کی مصنوعات کی پیداوار 30 فی صد سےبڑھا کر 45 فی صد تک کرنے کے لیئ حکومتی شعبوں کو کمپنی کے آلات خرید کرنے کے احکامات جاری کیے گئے ہیں۔ یہ منصوبہ سعودی شہریوں کے لیے تین سو سے چار سو نئی ملازمتیں پیدا کرے گا۔

ایک سوال کے جواب میں مطلق المرشید کا کہنا تھا کہ یہ کمپنی کا قومی صنعت عسکری شعبے میں سرمایہ کاری کا آغاز ہے۔ اس کے شاندار نتایج جلد سامنے آنا شروع ہو جائیں گے۔

خیال رہے کہ سعودی عرب میں جاری دفاعی نمائش میں سب سے پہلا معاہدہ سبکیم کمپنی کی ذیلی کمپنی ’وھج‘ اور "PORTSMITH" کمپنیوں کے درمیان طے پایا ہے۔ اس معاہدے کے تحت سعودی عرب میں لیزر گائیڈڈ بم اور دیگر دفاعی آلات تیار کیے جائیں گے۔