مشرقی الغوطہ میں گولہ باری سے زچہ وبچہ کا اسپتال تباہ :ویڈیو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی منظور کردہ قرارداد کی روشنی میں شام میں انسانی امداد بہم پہنچانے کے لیے جنگ بندی کی اپیلیں صدا بصحرا ثابت ہورہی ہیں جبکہ روس نے چند گھنٹے کی جنگ بندی کے اعلانات بھی کیے ہیں لیکن اس کے باوجود دارالحکومت دمشق کے نواحی علاقے مشرقی الغوطہ کے مختلف شہروں اور دیہات پر شامی فوج کی گولہ باری اور فضائی حملے جاری ہیں اور ان میں اسکولوں ، اسپتالوں اور مراکز ِصحت کو بلا امتیاز نشانہ بنایا جارہا ہے۔

فرانس میں قائم ڈاکٹروں کی عالمی تنظیم ’’طبیبان ماورائے سرحد ‘‘ ( ایم ایس ایف) نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر ایک ویڈیو جاری کی ہے ۔اس میں مشرقی الغوطہ میں واقع زچہ وبچہ کے ایک اسپتال کو گولہ باری سے تباہ ہوتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔ ایم ایس ایف نے 2014ء میں اس اسپتال کے قیام میں مدد دی تھی۔

ایم ایس ایف نے اپنے اکاؤنٹ پر مزید لکھا ہے کہ ’’ ( غوطہ کے ) علاقے میں ان کی امداد معدوم ہوتی جارہی ہے ۔جب ڈاکٹر (نڈھال ہوکر ) ڈھے پڑتے ہیں تو انسانیت کا بھی انہدام ہوجاتا ہے‘‘۔

شام میں جنگ کے متحارب فریقوں اور بالخصوص اسد رجیم سے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر جنگ بندی کے مطالبات کیے جارہے ہیں تاکہ مشرقی الغوطہ میں مخفلر قصبوں اور دیہات سے زخمیوں اور دوسرے مریضوں کو دوسرے علاقوں میں منتقل کیا جاسکے اور وہاں متاثرین تک انسانی امداد بہم پہنچائی جاسکے لیکن شامی فوج کے مسلسل زمینی اور فضائی حملوں کے بعد صورت حال انتہائی خراب ہوچکی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں