صنعاء کے ملٹری میوزیم سےعلی صالح کے نام و نشان مٹا دیے گئے

حوثیوں کی اجارہ داری اورانتقامی سیاست کی بدترین مثال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ایران نواز حوثی ملیشیا نے یمن کے صدر مقام صنعاء میں قائم تاریخی ملٹری اسٹیڈیم پراپنی اجارہ داری قائم کرتے ہوئے عجائب گھرمیں موجود مقتول سابق صدرعلی عبداللہ صالح سے متعلق تمام اشیاء ہٹا دیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق صنعاء کے وسط میں واقع آزادی اسٹیڈیم میں قائم عجائب گھر میں موجود سابق صدر کے نام ونشان کو مٹانے کی باقاعدہ مہم چلائی گئی۔

یمن کی جنرل پیپلز کانگریس کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ حوثیوں نے سابق صدر علی صالح کی جمع کردہ اشیاء کو وہاں سے ہٹا دیا ہے۔ ان میں سابق صدر کے اپنے استعمال میں رہنے والی اشیاء اور ملبوسات بھی شامل تھے مگر حوثیوں نے ان کی جگہ حوثی تحریک کے بانی حسین بدرالدین الحوثی سے نسبت رکھنے والی اشیاء رکھ دی ہیں۔

پیپلزکانگریس نے حوثیوں کے اس اقدام کو ضد،نفرت اور اخلاقی انحطاط کی بدترین مثال قرار دیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں