برطانوی شہزادی کے 80 سال پیشتر دورہ سعودیہ کی نایاب تصاویر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

برطانیہ اور سعودی عرب کے باہمی دوستانہ تعلقات تاریخ برسوں پرانی ہے۔ مختلف مواقع پر دونوں ملکوں کے رہ نماؤں کے ایک دوسرے کے ہاں دوروں کی یادگاری تصاویر دو طرفہ تعلقات اور دوستی کی توثیق کرتے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کو برطانوی شہزادی الیس کے تاریخی دورہ سعودیہ کی تصاویر ملی ہیں۔ ملکہ ویکٹوریا کی پوتی شہزادہ الیس نے 25 فروری 1938ء کو سعودی عرب کے دورے پر آئیں۔ برطانوی شاہی خاندان کے کسی فرد کا یہ نجی سطح پر سعودی عرب طویل ترین دورہ ہے۔

تاریخی دستاویزات کے مطابق شہزادی الیس کشتی کے ذریعے اپنے شوہر ایرل اتھلون کے ہمراہ سعودی عرب پہنچیں جہاں انہوں نے تین ہفتے تک قیام کیا۔ انہوں نے سعودی عرب کی ترقی پذیر اقتصادی منصوبوں کا دورہ کیا اور سماجی زندگی کے مظاہر سے لطف اٹھایا۔

شہزادہ الیس کا جدہ میں استقبال سعدی وزیر الشیخ ابراہیم بن معمر نے کیا جس کے بعد ان کے لیے قائم کردہ خصوصی قیام گاہ میں ٹھہرایا گیا۔ اس موقع پر انہوں نے سعودی فرمانروا شاہ عبدالعزیز آل سعود سے بھی ملاقات کی۔ واپسی سے قبل انہوں نے طائف، دارالحکومت الریاض،الاحساء، الخبر، مشرقی گورنری، سعودی عرب کے تاریخی بازاروں کا دورہ کیا۔ اس دورے میں اہم بات یہ رہی کہ برطانوی شہزادی نے متعدد مواقع پر سعودی عرب کا قومی لباس بھی زیب تن کیا۔ انہوں نے سعودی شہزادے سعود بن جلوی سے بھی ملاقات کی۔

شہزادی الیس کے دورہ سعودی عرب کو ثقافتی اہمیت کا حامل دورہ قرار دیا گیا تھا۔ برطانوی شہزادی نے سعودی عرب کے تاریخی مقامات میں الکندرہ شاہی محل، وادی فاطمہ اور دیگر مقامات کی سیر کی۔ اپنے شوہر ایرل اتھلون کے ہمراہ انہوں نے یاد گار تصاویر بھی بنوائیں۔ یہ تصاویر آج بھی برطانیہ کے عجائب گھروں اور لائبریریوں میں موجود ہیں۔ ان تصاویر میں انہیں سعودی لباس زیب تن کرنے کے ساتھ مشہور سعودی قہوہ نوش کرتے بھی دیکھا جا سکتا ہے۔

سعودی عرب میں قیام کے دوران شہزادہ الیس اور ان کے شوہر کی لی گئی الگ الگ اور گروپ کی شکل میں تصاویر سنہ 2013ء میں شاہ عبدالعزیز لائبریری میں نمائش کے لیے پیش کی گئی تھیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں