بچوں کے بعد ریٹائرڈ ملازمین بھی حوثیوں کی جنگ کا ایندھن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن میں ایران نواز حوثی باغیوں کی طرف سے بچوں کو جنگ میں جھونکے جانے کے حربوں کے بعد افرادی قوت پوری کرنے کے لیے ریٹائرڈ ملازمین کو بھی جنگ کا ایندھن بنانے کی کوششیں شروع کر دی گئی ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق حوثی باغیوں نے ملک میں افرادی قوت پوری کرنے کے لیے رضاکارانہ بھرتی مہم شروع کی تھی۔ اب ایک قدم اور آگے بڑھ کر باغیوں کی طرف سے سابق ملازمین کو بھی جنگ میں جھونکنے کے لیے جبری بھرتی کا سلسلہ شروع کیا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق حوثیوں نے اپنے زیرتسلط علاقوں میں سابق فوجی اور سول ملازمین کو جنگ کے لیے بھرتی ہونے اور انہیں تنخواہوں کا لالچ دے کر بندوق تھمانے کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔

حوثیوں کی طرف سے نئی بھرتیوں کے لیے کے لیے کمیٹیاں تشکیل دی گئی ہیں۔ یہ کمیٹیاں ریٹائرڈ سرکاری ملازمین اور سابق فوجی اہلکاروں کو ماہانہ بنیادوں پر تنخواہوں پر بھرتی کر رہی ہیں۔ تنخواہوں کا لالچ دینے کے ساتھ ساتھ باغی دیگر حربوں کے ذریعے بھی شہریوں کو بھرتی کرنے کی سازشیں کر رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں