داعش کے خلیفہ کی بہن کے لیے سزائے موت کا حکم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ایک عراقی عدالت نے دہشت گرد تنظیم داعش کے سربراہ ابوبکر البغدادی کی گرفتار بہن کو موت کی سزا کا حکم سنایا ہے۔ البغدادی کی بہن پر جہادیوں کی مدد کرنے کا الزام عائد کیا گیا تھا۔

ذرائع کے مطابق ایک عراقی عدالت نے عراق اور شام میں پسپائی اختیار کر جانے والی دہشت گرد تنظیم ’اسلامک اسٹیٹ‘ کے سربراہ ابوبکر البغدادی کی بہن کو موت کی سزا کا حکم سنایا ہے۔ رپورٹ کے مطابق عدالت میں استغاثہ نے اپنے الزامات کے حق میں مضبوط شہادتیں پیش کرتے ہوئے بتایا کہ البغدادی کی بہن داعش کے جنگجوؤں کی ضروریات پوری کرنے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے تھی اور اس سپلائی کے نتیجے میں ان شدت پسندوں نے کئی دہشت گردانہ حملے بھی کیے تھے۔

ابوبکر البغدادی کی بہن کو دی گئی سزا کے حوالے سے بیان عراق کی اعلیٰ ترین عدالتی ادارے سپریم جوڈیشل کونسل کے ترجمان عبدالستار بائرکدار نے جاری کیا۔ ترجمان کی جانب سے البغدادی کی بہن کی حوالے سے تفصیلات اور نام بھی ظاہر نہیں کیا گیا۔ بائرکدار نے یہ بھی بتایا کہ البغدادی کی بہن ’اسلامک اسٹیٹ‘ کی مالی معاونت بھی کرتی تھی اور عدالت میں اس مناسبت سے شواہد بھی پیش کیے گئے تھے۔

البغدادی کی بہن داعش کی مالی معاونت سن 2014 میں موصل پر قبضے کے بعد سے جاری رکھے ہوئے تھی۔ ابوبکر البغدادی کے بہنوئی کو بھی عراقی میں ایک عدالت کی جانب سے دہشت گردانہ سرگرمیوں میں ملوث ہونے کے جرم میں پہلے ہی سزائے موت سنائی جا چکی ہے۔ عراق میں ماتحت عدالت کی جانب سے سنائی گئی سزائے موت پر عمل درآمد اعلیٰ عدالتوں سے توثیق کے بعد کیا جاتا ہے۔

عراقی فوج نے گزشتہ برس دسمبر میں دہشت گرد تنظیم ’اسلامک اسٹیٹ‘ کو مکمل شکست دینے کا اعلان کیا تھا۔ اسی جنگ کے دوران ابوبکر البغدادی کے ہلاک اور زخمی ہونے کے مختلف بیانات سامنے آتے رہے ہیں لیکن ان کی باضابطہ تصدیق نہیں ہو سکی ہے۔ اسی طرح روسی وزارت دفاع نے جون سن 2017 میں الرقہ کے نواحی علاقے میں داعش کے کمانڈروں کی میٹنگ کو نشانہ بنانے کے بعد دعویٰ کیا تھا کہ اس حملے میں البغدادی کو بھی ہلاک کر دیا گیا ہے۔

امریکی حکام نے اس روسی دعوے کی تصدیق ابھی تک نہیں کی ہے۔ عراقی ذرائع ابلاغ کے مطابق البغدادی مارچ سن 2015 میں نینوا صوبے کے شہر الباج میں ایک حملے کے دوران شدید زخمی ہوا تھا لیکن اُس کے بعد کے حالات بارے کوئی معلومات دستیاب نہیں ہیں۔ شام کے حالات و واقعات پر نگاہ رکھنے والے شامی اپوزیشن کے ادارے سیریئن آبزرویٹری برائے انسانی حقوق کا کہنا ہے کہ اُس کے پاس مصدقہ ثبوت موجود ہیں کہ البغدادی ہلاک ہو چکا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں