مخیر اماراتی نے دیت ادا کر کے پاکستانی کو یقینی موت سے بچا لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

متحدہ عرب امارات کی ریاست راس الخیمہ میں نامعلوم مخیر حضرات نے دیت کی مد میں ایک لاکھ درہم ادا کر کے پاکستانی شخص کو جیل سے رہائی دلا دی۔

تفصیلات کے مطابق سات ماہ قبل متحدہ عرب امارات کے شہر راس الخیمہ میں حاجی نامی شخص کو پولیس نے قتل کے الزام میں گرفتار کیا تھا۔ ملزم کا کہنا تھا کہ وہ ٹرک کو سڑک کنارے کھڑا کرکے کسی سے ملاقات کرنے گیا تو اس دوران ایک شخص ٹرک کے نیچے لیٹ کر سو گیا۔ اس بارے میں ڈرائیور کو علم نہیں تھا کہ ٹرک کے نیچے کوئی سو رہا ہے اور اس نے واپس آ کر ٹرک چلا دیا جس کے باعث ٹرک کے نیچے لیٹا شخص ٹائروں تلے کچل کر موقع پر ہی دم توڑ گیا۔

چالیس سالہ پاکستانی شخص کو قتل غیرعمد پر قصاص اور واقعہ پر جرمانہ ادا کرنے تک قید رکھنے کا حکم سنایا گیا۔ پاکستانی شخص جرمانہ اور دیت کی رقم ادا کرنے کی استطاعت نہیں رکھتا تھا تاہم جب اس حوالے سے اخبار میں خبر شائع ہوئی تو کچھ مخیر حضرات نے رحم دلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ایک لاکھ درہم دیت اور 4 ہزار جرمانے کی رقم ادا کرکے ملزم کو قید سے رہائی دلا دی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں