حوثی باغیوں نے اقوام متحدہ کےدو امدادی کارکن اغواء کرلیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

یمن میں ایران نواز حوثی ملیشیا نے اقوام متحدہ کے دو امدادی کارکنان کو اغواء کرلیا ہے۔ دوسری جانب یمن کی آئینی حکومت نے باغیوں کی جانب سے عالمی ادارے کے کارکنان کے اغواء کی شدید مذمت کرتے ہوئے کارروائی کو امدادی آپریشن میں رکاوٹ ڈالنے کے مترادف قرار دیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق یمنی حکومت کے وزیر برائے لوکل گورنمںٹ اور سپریم ریلیف کمیٹی کے چیئرمین عبدالرقیب فتح نے ایک بیان میں کہا کہ حوثی باغیوں نے اقوام متحدہ کے دو کارکنان کو یرغمال بنا کر امدادی کارروائیوں میں رکاوٹ پیدا کرنے کی کوشش کی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ حوثیوں کی طرف سے عالمی اداروں کے امدادی کارکنان کو یرغمال بنانے اور اس کے نتیجے میں امدادی آپریشن کے متاثر ہونے کی ذمہ داری باغیوں پر عاید ہوتی ہے۔

یمن میں اقوام متحدہ کے مندوب برائے انسانی حقوق مارک لوکوک نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ادارے کے دو کارکنان کو یرغمال بنالیا گیا ہے۔ انہوں نے امدادی کارکنوں کی گرفتاری کا الزام ایران اور اس کے پروردہ حوثیوں پر عاید کیا اور کہا کہ یمنی باغی امدادی آپریشن میں رکاوٹ پیدا کرنے کی کوششیں کررہے ہیں۔ امدادی کارکنوں کا اغواء اس کی زندہ مثال ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں