.

سعودیہ: ڈرائیور کے ہاتھوں معذور لڑکی کو ہراساں کرنے کا واقعہ

پراسیکیوٹرنے ملزم کی فوری گرفتاری کا حکم دے دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں سوشل میڈیا پر ایک کارڈرائیور کی جانب سے معذور لڑکی کو جنسی طورپر ہراساں کیے جانے کے واقعے نے سخت غم وغصے کی لہر دوڑا دی ہے۔ اس واقعے کی فوٹیج وائرل ہونے کے بعد پراسیکیوٹر جنرل الشیخ سعود بن عبداللہ المعجب نے ملزم کی فوری گرفتاری اور اس کے خلاف موثر قانونی کارروائی کا حکم دیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ایک فوٹیج میں ایک کار ڈائیور کو کار میں سوار معذور لڑکی کو ہراساں کرتے دیکھا جاسکتا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ بچی کو ہراساں کرنے کا مرتکب ملزم ایک نجی ٹیکسی سروس کا ملازم ہے۔ سماجی رابطوں کی ویب سائیٹس پر اس فوٹیج کے منظرعام پرآنے کےبعدعوامی حلقوں نے ملزم کی فوری گرفتاری اور اس کے خلاف قانونی کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

سعودی حکومت کے ترجمان خالد ابال الخیل کا کہنا ہے کہ بچی کوہراساں کرنے کے مرتکب ملزم کے خلاف کارروائی کے لیے تمام ادارے آپس میں رابطے میں ہیں۔