قطرکو موجودہ حکمرانوں سے نجات دلائیں گے: سلطان بن سحیم

’حکمران طبقہ خطے میں عدم استحکام کا ذمہ دار ہے‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

قطر کے حکمران خاندان کے سرکردہ منحرف رہ نما الشیخ سلطان بن سحیم آل ثانی نے موجودہ حکمرانوں کو ایک بار پھر کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ موجودہ حکمران طبقہ قوم کو مصائب مسائل کے سوا کچھ نہیں دے سکا ہے۔ ہم دیگر عرب اقوام کے ساتھ مل کر قطر کو موجودہ حکمرانوں سےنجات دلانے کے لیے کام جاری رکھیں گے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائیٹ ’ٹوئٹر‘ پرپوسٹ کردہ ایک بیان میں سلطان بن سحیم نے کہا کہ قطر کے موجودہ حکمران طبقے نے ہمارے پڑوسیوں کے لیے مشکلات پیدا کیں، ہمارے امن واستحکام کو تباہ کیا۔ میں قطر کے تمام بہن بھائیوں کویقین دلاتا ہوں ملک کو موجودہ نظام حکومت سے نجات دلا کر اسے فطری دھارے میں لانے کے لیے کوششیں جاری رکھوں گا۔ان کا کہنا تھا کہ ہم سب ایک ہی صف میں کھڑے ہیں اور ہمارا مقابلہ جرائم کو فروغ دینے والوں کےساتھ ہے۔ ہم انہیں ختم کرکے چھوڑیں گے۔

قبل ازیں ’العربیہ‘ کے پروگرام ’مع ترکی الدخیل‘ میں اظہار خیال کرتے ہوئے سلطان بن سحیم نے کہا تھا کہ قطر کو چلانے والی اصل طاقت سابق قطری امیر الشیخ حمد بن خلیفہ کی قائم کردہ ایک تنظیم ہے۔ انہوں نے سابق امیر قطر پر تین عشرے قبل اپنے والد کو قتل کرنے کا بھی الزام عاید کیا اور کہا کہ قطر کی موجودہ پالیسی کو قطری قوم اور دوسرے عرب ممالک نے مسترد کردیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں