قطر کا اسد رجیم کی سپورٹس فیڈریشن کے ساتھ دو طرفہ تعاون کا معاہدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

خلیجی ریاست قطر نے شام میں اسد رجیم کے مظالم کو نظرانداز کرتے ہوئے اس کے ساتھ دوبارہ راہ ورسم بڑھانا شروع کردیے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق قطری فٹ بال فیڈریشن نے شام کی فٹ بال فیڈریشن کے ساتھ دو طرفہ تعاون کا ایک معاہدہ کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق قطری فٹ بال فیڈریشن کے سربراہ الشیخ حمد بن خلیفہ بن احمد آل ثانی نے حال ی میں شامی فٹ بال فیڈریشن کےساتھ ایک معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔

مبصرین نے قطر کی طرف سے اسد رجیم کے حوالے سے اس پیش رفت کو حیران کن قرار دیا ہے۔

قطری فٹ بال فیڈریشن کی سرکاری ویب سائیٹ پرپوسٹ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ادارے کے سربراہ حمد بن خلیفہ بن احمد آل ثانی نے اپنےشامی ہم منصب صلاح رمضان کے ساتھ اتوار کو ایک سمجھوتے پر دستخط کیے۔

اسی خبر کے ذیل میں بتایا گیا ہے کہ قطری فٹ بال فیڈریشن نے اردنی فٹ بال یونین اور لبنانی فٹ بال آرگنائزیشن کے ساتھ بھی باہمی تعاون کے الگ الگ معاہدے کیے ہیں۔

شام اور قطر کے درمیان سپورٹس کے میدان میں تعاون کے معاہدے کے خبر ایرانی، روسی اور قطری ذرائع ابلاغ نے بھی شائع کی ہے۔ رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ شامی فٹ بال فیڈریشن کے سربراہ صلاح رمضان نے قطری حکومت کی طرف سے تعاون پردوحہ کا خصوصی شکریہ ادا کیا ہے۔

اسد رجیم کے حامی حلقوں نے اسے مثبت پیش رفت قرار دینے کے ساتھ حیرت انگیز اقدام قرار دیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ شام کی جنرل اسپورٹس یونین کو اس معاہدے کا علم نہیں۔ شام کی جنرل سپورٹس یونین کے سربراہ میجر جنرل موفق جمعہ نے قطر کے ساتھ کھیلوں کے حوالے سے کسی بھی معاہدے کی سختی سے تردید کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں