.

مشرقی الغوطہ میں روسی فوج کی بمباری سے 10 شہری ہلاک

آج جمعہ کو 20 ہزار افراد کی نقل مکانی کا امکان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جمعہ کو علی الصباح شام کے جنگ سے تباہ حال علاقے مشرقی الغوطہ میں روسی فوج کی وحشیانہ بمباری کے نتیجے میں مزید 10 عام شہری جاں بحق اور متعدد زخمی ہوگئے

شام میں انسانی حقوق کی صورت حال پرنظر رکھنے والے ادارے’آبزرویٹری‘ کے مطابق روسی فوج نے جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب سقبا قصبے میں شہری آبادی پر بم گرائے جس کے نتیجے میں دس شہری جاں بحق اور متعدد زخمی ہوئے ہیں۔ دوسری جانب روس نے بمباری کی تردید کی ہے۔

انسانی حقوق کے آبزرور رامی عبدالرحمان نے بتایا کہ شام کی سرکاری فوج سقبا کی طرف پیش قدمی کی کوشش کررہی ہے۔

خیال رہے کہ شامی فوج نے روس اور دیگر حامی ملیشیاؤں کی معاونت سے 18 فروری کو مشرقی الغوطہ میں وحشیانہ بمباری شروع کی تھی۔ شامی فوج نے مشرقی الغوطہ کے 70 فی صد علاقے پر کنٹرول واپس لے لیا ہے تاہم لڑائی میں بڑی تعداد میں عام شہری جاں بحق ہوگئے ہیں۔

رامی عبدالرحمان کا کہنا ہے کہ شامی فوج مشرقی الغوطہ کی جنوب مغربی سمت کی طرف سے آگے بڑھ رہی ہے۔ اس علاقے میں فیلق الرحمان نامی گروپ کے جنگجو موجود ہیں۔

کل جمعرات کو مشرقی الغوطہ کی جنوبی پٹی میں حموریہ سے قریبا 20 ہزار افراد نے نقل مکانی کی تھی۔ آج جمعہ کو مزید بیس ہزار افراد کی نقل مکانی کا امکان ہے۔