.

فرانس: شہزادہ البرٹ دوم کا روپ دھار کرلوگوں کو لوٹنے کی مہم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اہم شخصیات کےروپ میں لوگوں کو بلیک میل کرنا اور انہیں لوٹنا اب عام سی بات بن چکی ہے۔ حال ہی میں فرانس کی جنوب مشرقی ریاست موناکو کی حکومت نے خبردار کیا کہ کچھ نوسرباز شہزادہ البرٹ دوم کا روپ دھارنے کے بعد لوگوں کی لوٹ مار کررہےہیں۔ عوام ایسےسماج دشمن عناصر سے با خبررہیں۔

مقامی اخبار ’موناکو ماٹان‘ کے مطابق دھوکہ دہی کے مرتکب عناصر خود کو شہزادہ البرٹ دوم ظاہر کرکے بعض متاثرہ افراد سے رابطے کرتے ہیں اوریہ ظاہرکرتے ہیں کہ وہ شہزادے کے محل سے ان کے ساتھ رابطےمیں ہیں۔

یہ پہلا موقع نہیں کہ موناکو میں لوگوں کے ساتھ دھوکہ دہی کی گئی ہے۔ چند ماہ قبل جعلی شہزادہ مونا کو نے شدت پسندوں کے ہاتھوں اغواء ہونے والے بعض افراد کی بازیابی کا دھوکہ دے کر کئی افراد کو لوٹا۔ پولیس نے اس واقعے کی تحقیقات شروع کی تھیں۔ اس سے قبل کہ پولیس کوئی حتمی رپورٹ جاری کرتی نوسربازوں نے مزید کئی لوگوں کو بھی بے وقوف بنا لیا۔

’موناکو‘ حکومت کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ نوسربازوں اور دھوکہ دہی کے مرتکب مافیا کے بعض عناصر سرکردہ شخصیات کےروپ میں ریاست میں لوگوں سے رابطے کرتےہیں۔ ایسے سماج دشمن عناصر موبائل فون کے پیغامات یا واٹس ایپ سے لوگوں کو تک رسائی حاصل کرکے انہیں لوٹتےہیں۔

حاکم کا کہنا ہے کہ مشکوک افراد کی طرف سے دیے گئے رابطہ نمبر بند ملے ہیں۔ اس طرح کی دھوکہ دہی کا مقصد بیرون ملک لوگوں کی رقوم بالخصوص ایشیائی ملکوں کے باشندں کے بنک اکاؤنٹس سے پیسے منتقل کرانے کی کوشش کرنا ہے۔