’حوثیوں کی ایرانی پشت پناہی کے مزید شواہد جلد جاری کریں گے‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی قیادت میں یمن میں جاری حوثی بغاوت کچلنے کے لیے سرگرم عرب اتحادی فوج نے باور کرایا ہے کہ وہ عنقریب حوثی باغیوں کو ایران کی طرف سے اسلحہ کی سپلائی کے مزید شواہد بھی جاری کرے گی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے اتوار کو ایک بیان میں کہا کہ وہ کل سوموار کو یمنی حوثیوں کی ایرانی پشت پناہی کے مزید ٹھوس شواہد جاری کریں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایران حوثیوں کو اسلحہ اور بیلسٹک میزائل اسمگل کرنے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہے جس کے باعث پورے عرب خطے کی سلامتی داؤ پر لگ چکی ہے اور عالمی امن کو بھی خطرات لاحق ہیں۔

کرنل المالکی کا کہنا تھا کہ وہ سوموار کے روز سعودی عرب کے معیاری وقت کے مطابق دن تین بج کر دس منٹ پر ایک پریس کانفرنس کریں گے جس میں ایران کے حوثیوں بو اسمگل کیے گئے بیلسٹک میزائل اور دیگر اسلحہ کی شواہد پیش کریں گے۔

خیال رہے کہ سعودی عرب کی قیادت میں قائم عرب اتحاد نے بار بار ایران پر حوثی باغیوں کو اسلحہ اور بیلسٹک میزائلوں کی سپلائی کا الزام عاید کیا ہے۔ عرب ملٹری اتحاد کا کہنا ہے کہ ایران حوثی باغیوں اور خطے کے دیگر شدت پسند گروپوں کو اسلحہ فراہم کرکے علاقائی اور عالمی سلامتی کو خطرے میں ڈال رہا ہے۔

قبل ازیں پانچ فروری کو کرنل ترکی المالکی نے باب المندب میں عالمی جہاز رانی کو نشانہ بنائے جانے کے ایرانی منصوبوں کےحوالے سے آگاہ کیا تھا۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ حوثی شدت پسند الحدیدہ بندرگاہ میں لنکر انداز ہونے والے بحری جہازوں کو بارود سے بھری کشتیوں کی مدد سے اڑانے کی کوششیں کررہا ہے اور اس مذموم مقصد کے لیے حوثیوں کو آلہ کار کے طور پراستعمال کیا جا رہا ہے۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ پانچ فروری 2018ء تک حوثی باغیوں کی طرف سے ایران کے فراہم کردہ 95 بیلسٹک میزائل سعودی عرب پر داغے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں