.

الجوف: یمنی فوج کا حوثیوں کے تزویراتی عسکری کیمپ پر کنٹرول

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں سرکاری فوج نے منگل کے روز ملک کے شمال مشرقی صوبے الجوف کے ضلعے برط العنان میں بڑے پیمانے پر کامیابیوں کا اعلان کیا ہے۔ اس دوران یمنی فوج کو عرب اتحاد کے طیاروں کی معاونت بھی حاصل رہی۔

یمنی فوج کے سکستھ ملٹری زون کے زرائع کے مطابق برط العنان میں تقریبا 15 کلو میٹر وسیع رقبے کو آزاد کرا لیا گیا۔ اس دوران یمنی فوج الجوف صوبے کے شمال مغرب میں واقع تزویراتی اہمیت کے عسکری کیمپ "طيبۃ الاسم" تک پہنچ گئی۔ میجر جنرل منصور ثوابہ کا کہنا ہے کہ یمنی فوج نے مذکورہ عسکری کیمپ کا محاصرہ کر لیا ہے اور وہ اس وقت فائرنگ کی زد میں ہے۔ ثوابہ کے مطابق باغی ملیشیا اس کیمپ کو اپنے جنگجوؤں کے جمع ہونے کے مقام کے طور پر اور صعدہ اور دیگر علاقوں سے آنے والی کمک جمع کرنے کے واسطے استعمال کرتی ہے۔ میجر جنرل ثوابہ نے مزید بتایا کہ یمنی فوج کو حاصل ہونے والی کامیابیوں میں عرب اتحاد کے طیاروں اور اپاچی ہیلی کاپٹروں کی براہ راست معاونت شامل رہی۔ اتحادی طیاروں نے الجوف صوبے کے مختلف مقامات پر باغی ملیشیا کی کمک اور جتھوں کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں اسے بھاری جانی اور مادی نقصان اٹھانا پڑا۔

سِکستھ ملٹری زون کے جنرل اسٹاف کے مطابق یمنی فوج نے حالیہ لڑائی کے دوران بھاری اور ہلکے ہتھیاروں کا ایک بڑا ذخیرہ قبضے میں لے لیا جن میں M55 ٹینک کے علاوہ مختلف نوعیت کا گولہ بارود شامل ہے۔

یاد رہے کہ اس وقت یمنی فوج کو الجوف صوبے کے 85% سے زیادہ رقبے پر کنٹرول حاصل ہے۔ یمنی فوج بقیہ حصّے کو بھی اپنے کنٹرول میں لینے کے لیے کوشاں ہے۔ اس کے بعد وہ صعدہ صوبے میں حوثیوں کے مرکزی گڑھ اور شمال میں عمران صوبے کی جانب پیش قدمی کرے گی۔ صوبہ عمران دارالحکومت صنعاء کے شمالی بیرونی پھاٹک کی حیثیت رکھتا ہے۔