.

لیبیا میں امریکی حملےمیں اہم القاعدہ کمانڈر ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی فوج کی طرف سے بدھ کو جاری ہونے والے ایک بیان میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ رواں ہفتےکے اوائل میں لیبیا میں ایک فضائی حملے میں ہلاک ہونے والے دو شدت پسندوں میں ایک کا تعلق القاعدہ سے تھا اور وہ تنظیم کا مراکش میں اہم کمانڈر اور ذمہ دار بتایا جاتا ہے۔

خیال رہے کہ امریکی فوج نے گذشتہ ہفتے کے روز لیبیا میں ایک فضائی حملے میں دو شدت پسندوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیاتھا۔

خبر رساں ادارے’رائٹرز‘ نے امریکی فوج کی طرف سے جاری ہونے والے بیان کی تفصیلات شائع کی ہیں جس میں امریکیوں کا کہنا ہے کہ لیبیا کے وسیع صحرائی علاقے کو القاعدہ کے جنگجو اپنے محفوظ ٹھکانوں کےطورپر استعمال کرتے ہیں۔ امریکی فوج القاعدہ کو لیبیا کے صحرا میں کچلنا چاہتی ہے۔

قبل ازیں افریقا میں امریکی کمانڈ کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا تھا کہ فوج نے لیبیا کے جنوبی شہر اوباری میں ایک فضائی کارروائی میں دو دہشت گردوں کو ہلاک کیا ہے۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ کارروائی لیبیا کی آئینی حکومت کے علم میں لانے کے بعد کی گئی۔ اس حملے میں کسی عام شہری کی ہلاکت کی تصدیق نہیں ہوئی۔