.

عبدالفتاح السیسی 97 فی صد ووٹ لے کر دوبارہ صدر منتخب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے صدر عبدالفتاح السیسی 97 فی صد ووٹ لے کر چار سال کے لیے دوبارہ منتخب ہوگئے ہیں ۔

مصر کے الیکشن کمیشن نے آج سوموار کو صدارتی انتخابات کے باضابطہ سرکاری نتائج کا اعلان کیا ہے۔ عبدالفتاح السیسی چار سال قبل بھی اتنے فی صد ووٹ لے کر پہلی مرتبہ ملک کے صدر منتخب ہوئے تھے لیکن اس مرتبہ صدارتی انتخابات میں ووٹ ڈالنے کی شرح انتہائی کم رہی ہے اور صرف ساڑھے 41 فی صد ووٹروں نے اپنا حق رائے دہی استعمال کیا ہے۔

مصر کے سرکاری اخبار الاہرام نے صدارتی انتخاب کے لیے 26 سے 28 مارچ تک ہونے والی پولنگ میں ووٹ ڈالنے کی شرح 42.08 فی صد بتائی ہے اور کہا ہے کہ مصر کے کل چھے کروڑ رجسٹرڈ ووٹروں میں سے ڈھائی کروڑ نے اپنا حق رائے دہی استعمال کیا ہے۔

الاہرام کے مطابق مصر کی نیشنل الیکشن اتھارٹی (این ای اے) کے سربراہ لاشین ابراہیم نے قاہرہ میں ایک نشری نیوز کانفرنس میں سوموار کو نتائج کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ اندرون اور بیرون ملک 24,254,152 شہریوں نے صدر کے انتخاب میں اپنا حق رائے دی استعمال کیا ہے۔اس طرح ووٹ ڈالنے کی شرح 41.5 فی صد رہی ہے۔

انتخابی نتائج کے مطابق صدر السیسی کے مد مقابل واحد صدارتی امیدوارالغد پارٹی کے سربراہ موسیٰ مصطفیٰ موسیٰ کے حق میں صرف 656,534 ووٹ ڈالے گئے ہیں اور یہ کل ووٹوں کا 2.92 فی صد بنتے ہیں۔

مصری آئین کے مطابق صدر عبدالفتاح السیسی کی موجودہ چار سالہ مدت سات جون کو ختم ہوگی اور وہ آٹھ جون کو نئی مدت صدارت کے لیے اپنا عہد ہ سنبھالیں گے۔