.

افریقی ملک چاڈ کے شہریوں کے امریکا کے سفرپر پابندی ختم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی حکومت نے افریقی ملک چاڈ کے باشندوں کے امریکا کے سفرپر عاید کردہ پابندیاں چھ ماہ کے بعد اٹھانے کا اعلان کیا ہے۔

وائیٹ ہاؤس کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ چھ ماہ تک حکومت نے یہ جانچنے کی کوشش کی کہ آیا چاڈ کے باشندوں کی طرف سے امریکا کی سلامتی کو کسی قسم کا کوئی خطرہ لاحق ہوسکتا ہے یا نہیں۔ چاڈ کے باشندوں کی طرف سے تسلی ہونے کے بعد ان کے امریکا کے سفر پر عاید کردہ پابندی ختم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ ستمبر 2017ء کے آخری ہفتے امریکی انتظامیہ نے ایمی گریشن سے متعلق ایک آرڈر جاری کیا تھا جس میں بعض ممالک کے باشندوں کے امریکا کے سفر پر پابندی عاید کردی گئی تھی۔ ان میں زیادہ تر مسلمان اور افریقی ملک شامل تھے تاہم بعد ازاں سوڈان کو اس فہرست سے نکال دیا گیا تھا۔ سفری پابندیوں کی زد میں آنے والے ملکوں میں شمالی کوریا، ویزویلا ، چاڈ ، ایران، لیبیا، صومالیہ، شام اور یمن شامل تھے۔

بعض ممالک میں یہ پابندی جزوی اور بعض میں مکمل طورپر عاید کی گئی تھی۔ چاڈ اور شمالی کوریا کے کسی شہری کی امریکا داخلے پر پابندی لگا دی گئی تھی جب کہ وینز ویلا کے حکومتی عہدیدار اور ان کے خاندان کے امریکا میں داخلے کو ممنوع قرار دیا گیا تھا۔