.

دل خراش حادثے میں سعودی نوجوان کے 9 عزیز جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے صوبے ریاض میں تین خاندانوں کو اُس وقت الم ناک صورت حال سے دوچار ہونا پڑا جب انہوں نے اپنے اہل خانہ میں شامل 9 افراد کو ایک خوف ناک ٹریفک حادثے میں ہمیشہ کے لیے کھو دیا۔ الدلم ضلعے سے تعلق رکھنے والے ہلاک شدگان میں بچّے خواتین اور ایک نوجوان شامل ہے۔

حادثے میں لقمہ اجل بننے والے افراد کے ایک چچا زاد بھائی محمد موسی طباسی نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو میں اس اندوہ ناک حادثے کی تفصیلات بتائیں۔ اس دوران مردہ خانے کے سامنے کھڑے طباسی کی آنکھوں سے مسلسل آنسو بہہ رہے تھے۔

حادثے میں جاں بحق ہونے والے سعودی نوجوان عبداللہ نے (جس کی شادی کو ایک برس بھی مکمل نہیں ہوا) اپنے خاندان کو اطلاع دی کہ وہ ان سے ملنے کے لیے ریاض سے آ رہا ہے۔ یہ سن کر اُس کے خاندان کے بچے خوش ہو گئے کہ اب وہ اپنے ماموں کے ساتھ تفریح کے لیے پکنک پر جائیں گے۔

ٹریفک حکام کی رپورٹ کے مطابق سیر و تفریح کے لیے نکلنے والے عبداللہ کی گاڑی کو ایک چوراہے پر دوسری جانب سے تیز رفتار گاڑی نے زور دار ٹکر ماری۔ اس کے نتیجے میں عبداللہ کی گاڑی نے اُلٹ کر کئی قلابازیاں کھائیں جب کہ گاڑی میں موجود بچوں کے چیتھڑے اڑ گئے۔

طباسی کے مطابق حادثے کے نتیجے میں بچوں کی لاشوں کے ٹکڑے ہو گئے یہاں تک کہ ان کی شناخت کے لیے بھی کوئی عضو سالم نہیں بچا۔ شہری دفاع کی ٹیم نے گاڑی کو پرزے پرزے کر کے لاشوں کو نکالا۔

حادثے میں گاڑی چلانے والا عبداللہ سعدی طباسی ، اس کی دو بہنیں اور چھ بچّے جاں بحق ہوئے۔