شامی اپوزیشن کے انخلاء کے بعد قلمون کے مختلف علاقوں پر داعش کا قبضہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

شام میں دمشق کے نواحی علاقے مشرقی قلمون سے اپوزیشن کے گروپوں کے انخلاء کے بعد داعش تنظیم نے علاقے میں شامی فوج اور اس کی ہمنوا ملیشیاؤں کے متعدد ٹھکانوں پر قبضہ کر لیا ہے۔

دوسری جانب بشار الاسد کی فوج نے دہشت گرد تنظیم کے نئے ٹھکانوں پر بم باری کا سلسلہ شدید کر دیا ہے۔ یہ پیش رفت روس کے ساتھ معاہدے کے تحت ان ٹھکانوں سے شامی اپوزیشن کے گروپوں کے انخلاء کے ایک روز بعد سامنے آئی ہے۔ اپوزیشن گروپوں کو علاقے میں داعش تنظیم کے خلاف دفاع کی اولین دیوار شمار کیا جاتا تھا۔

اتوار کے روز بسوں کے ذریعے شامی جنگجوؤں اور شہریوں کو مشرقی قلمون کے علاقے سے منتقل کر کے شام کے شمال مغرب میں شامی اپوزیشن کے زیر کنٹرول ایک علاقے پہنچایا گیا۔

شام میں انسانی حقوق کی نگرانی کرنے والے سب سے بڑے گروپ المرصد کے مطابق منتقل کیے جانے والے بعض افراد کو عفرین پہنچایا گیا۔

مشرقی قلمون کا علاقہ دارالحکومت دمشق سے 60 کلومیٹر شمال مشرق میں واقع ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں