بیت المقدس کی سڑکوں پر "امریکی سفارت خانے" کے سائن بورڈز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانوی خبر رساں ایجنسی نے ایک عینی شاہد کے حوالے سے بتایا ہے کہ پیر کے روز مقبوضہ بیت المقدس میں 3 سائن بورڈز دیکھنے میں آئے ہیں جن پر "امریکی سفارت خانہ" تحریر ہے۔ یہ پیش رفت آئندہ ہفتے شہر میں سفارت خانے کے افتتاح سے قبل سامنے آئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق انگریزی ، عبرانی اور عربی زبان کے یہ بورڈز بیت المقدس کے جنوبی حصّے میں امریکی قونصل خانے کی عمارت کے نزدیک لگائے گئے ہیں۔ یہ عمارت 14 مئی کو سرکاری طور پر سفارت خانے کی منتقلی کے بعد امریکی سفارتی مشن کا صدر دفتر بن جائے گی۔

اس سے قبل فلسطینی صدر محمود عباس نے فلسطینی قومی کونسل کا ایک اجلاس طلب کیا تھا تا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنے اور امریکی سفارت خانے کو وہاں منتقل کرنے سے متعلق فیصلوں کے جواب کی حکمت عملی وضع کی جا سکے۔

توقع ہے کہ امریکی سفارت خانے کی منتقلی کے ایک روز بعد 15 مئی کو "یوم النکبۃ" (یعنی اسرائیل کے قیام کے 70 برس پورے ہونے) کی یاد کے موقع پر فلسطینی احتجاج کا سلسلہ اپنے عروج پر پہنچ جائے گا۔ یاد رہے کہ 1948ء میں اسی روز لاکھوں فلسطینیوں کو جبری طور پر ہجرت پر مجبور کر دیا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں