.

نوری المالکی اور سلیم الجبوری کا پارلیمانی انتخابات کے نتائج میں گڑ بڑ پر انتباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کے نائب صدر اور سابق وزیراعظم نوری المالکی نے ہفتے کے روز ملک میں ہونے والے تاریخی پارلیمانی انتخابات میں سب سے پہلے ووٹ ڈالا ہے۔

انھوں نے بغداد کے انتہائی سکیورٹی والے علاقے گرین زون میں ووٹ ڈالنے کے بعد خبر دار کیا ہے کہ اگر برقی آلات ( الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں ) کے ذریعے انتخابی نتائج میں گڑ بڑ کرنے کی کوشش کی گئی تو اس کے تباہ کن مضمرات ہوں گے۔

نوری المالکی پارلیمانی انتخابات میں موجودہ عراقی وزیراعظم حیدر العبادی کے سب سے بڑی سیاسی حریف سمجھے جارہے ہیں ۔

عراقی پارلیمان کے صدر سلیم الجبوری نے بھی ووٹ ڈالنے کے بعد اسی قسم کا انتباہ جاری کیا ہے۔انھوں نے کہا کہ ’’ ہم ووٹ ڈالنے اور ووٹوں کی گنتی کے عمل کا بڑے قریب سے مشاہدہ کررہے ہیں ۔ پارلیمانی انتخابات کے لیے پولنگ اور ووٹوں کی گنتی کے عمل میں الیکشن کمیشن کا کردار بڑا اہم ہے‘‘۔

عراق بھر میں آج داعش کے خلاف جنگ میں فتح کے بعد ہونے والے پہلے عام انتخابات کے لیے ووٹ ڈالے جارہے ہیں ۔