.

اسماعیل ہنیہ مصر کی دعوت پر قاہرہ میں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

حماس تنظیم کا ایک وفد تنظیم کے سربراہ اسماعیل ہنیہ کی قیادت میں اتوار کے روز قاہرہ روانہ ہو گیا جہاں وہ مصری انٹیلی جنس کے ڈائریکٹر سے ملاقات کرنے کے علاوہ غزہ پٹی کی سرحد پر "واپسی کی ریلی" کے نام سے ہونے والے احتجاجی مظاہروں کو بھی زیر بحث لائے گا۔

اسماعیل ہنیہ نے حماس کے دو رہ نماؤں خلیل الحیہ اور روحی مشتہی کے ساتھ صبح سویرے رفح کی سرحدی گزر گاہ کے ذریعے کوچ کیا۔

حماس تنظیم کے ترجمان فوزی برہوم کے مطابق اسماعیل ہنیہ کا یہ دورہ مصری حکومت کی دعوت پر کیا جا رہا ہے۔ اس دوران ہنیہ مصری ذمّے داران کے ساتھ فلسطینی اور علاقائی منظر نامے میں تازہ ترین پیش رفت پر بات چیت کریں گے۔

ذرائع کے مطابق اسماعیل ہنیہ قائم مقام انٹیلی جنس ڈائریکٹر بریگیڈیئر جنرل عباس کامل سے ملاقات کریں گے۔

فلسطینی ذمّے داران کا کہنا ہے کہ پیر کے روز بیت المقدس میں امریکی سفارت خانے کے افتتاح کے موقع پر توقع ہے کہ ہزاروں فلسطینی اس اشتعال انگیز اقدام پر سراپا احتجاج بن جائیں گے۔

یاد رہے کہ 30 مارچ سے کئی ہزار فلسطینی اسرائیل کے ساتھ سرحد کے نزدیک جمع ہیں اور وہ اپنی اراضی پر واپسی کے حق کا مطالبہ کر رہے ہیں جہاں سے انہیں 1948ء میں اسرائیلی ریاست کے قیام کے موقع پر نکال دیا گیا تھا۔

تقریبا ڈیڑھ ماہ سے سرحد پر جاری مظاہروں کے دوران قابض اسرائیلی فوج کے ہاتھوں اب تک 53 فلسطینی جاں بحق ہو چکے ہیں۔