شام سے مقبوضہ وادی گولان پر 55 میزائل داغے گئے: حسن نصراللہ

’شام کی جنگ ایک نیا موڑ اختیار کر گئی ہے‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

لبنانی ایران نواز شیعہ ملیشیا حزب اللہ کے سربراہ حسن نصراللہ نے کہا ہے کہ گذشتہ ہفتے شام سے اسرائیل کے زیر تسلط وادی گولان پر میزائل حملوں نے شام کی جنگ کو ایک نئے موڑ میں داخل کر دیا ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ گذشتہ ہفتے شام کی سرزمین سے مقبوضہ وادی گولان پر 55 میزائل داغے گئے تھے۔

ایک ٹی وی بیان میں حسن نصراللہ نے کہا کہ میزائل حملوں نے واضح کیا ہے کہ شام اور اس کے اتحادی صہیونی ریاست کے خلاف شام کے دفاع کے لیے کہیں بھی جاسکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ گذشتہ ہفتے شام کے اندر سے اسرائیل کے زیر تسلط وادی گولان میں اسرائیلی تنصیبات پر 55 میزائل داغے گئے، جن کے نتیجے میں زور دیا دھماکے ہوئے اور یہودی آباد کاروں کو بنکروں میں بھاگنے پر مجبور کردیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ اسرائیل نے دعویٰ کیا تھا کہ اس نے گذشتہ ہفتے شام کی طرف سے داغے گئے 20 میزائل مار گرائے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں