قطری حکومت نے ایران اور ترکی کو اپنا دوست بنا رکھا ہے:سلطان بن سحیم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

قطری حکومت کے مخالف آل ثانی خاندان کے سرکردہ رہ نما الشیخ سلطان بن سحیم نے دوحہ کی علاقائی پالیسی کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ دوحہ نے ایران اور ترکی کو اپنا دوست بنا رکھا ہے حالانکہ یہ ممالک قطر کی دوستی کےلائق نہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سلطان بن سحیم نے مائیکرو بلاگنگ ویب سائیٹ پر پوسٹ کردہ ایک بیان میں کہا کہ ایران اور ترکی دونوں ایسے ممالک ہیں جو عرب دنیا سے دور رہنے کے ساتھ بعض معاملات میں مداخلت کرتے ہیں۔

الشیخ سحیم نے یہ بیان سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد کے دفتر کے ڈائریکٹر بدر العساکر کی طرف سے جاری کردہ اس تصویر کے بعد جاری کیا ہے جس میں محمد بن سلمان، ابو ظہبی کے ولی عہد الشیخ محمد بن زاید، بحرین کے فرمانروا حمد بن عیسیٰ اور مصری صدر عبدالفتاح السیسی کوایک ساتھ دیکھا جاسکتا ہے۔

سلطان بن سحیم نے لکھا کہ قطر کی پالیسیوں کی وجہ سے چار عرب ممالک سعودی عرب، امارات، بحرین اور مصر نے اس کا بائیکاٹ جاری رکھا ہوا ہے۔ اس بائیکاٹ کے باعث قطر تنہائی کا شکار ہے اور تنہائی ختم کرنے کے لیے دوحہ ایران اور ترکی کے ساتھ دوستانہ تعلقات کو فروغ دے رہاہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں