ایران: سماعت سے محروم افراد کے لیے گروپ کو مذہبی ترانوں کے مظاہرے سے روک دیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ایران میں حکام نے سماعت سے محروم افراد کے لیے خواتین کے گروپ کو مذہبی ترانے ادا کرنے کے مظاہرے سے روک دیا ہے۔ حکام کے مطابق اس اقدام کا سبب گروپ کی لڑکیوں کی جانب سے "نا مناسب اور متنازع حرکات" کا کیا جانا ہے۔

سماعت سے محروم افراد کے ٹوئیٹر پر اکاؤنٹ نے بتایا ہے کہ ایرانی ذمے داران نے ماہ رمضان میں چند قسطیں پیش کرنے کے بعد اس پروگرام کو روک دیا ہے۔

گروپ کی ڈائریکٹر نے واضح کیا کہ حکام نے لڑکیوں کی جانب سے "غیر موزوں" حرکات کے سبب اس سلسلے کو روک دیا ہے جب کہ گروپ کی لڑکیاں کلام کے بجائے اشاروں کی زبان استعمال کر رہی تھیں۔

اس حوالے سے سوشل میڈیا پر وسیع پیمانے پر پھیلی وڈیو میں گروپ کی لڑکیاں اسلامی لباس اور ایرانی برقعے میں ملبوس ہو کر مذہبی ترانوں کا مظاہرہ کر رہی ہیں۔

دوسری جانب سوشل میڈیا پر کارکنان سے ایرانی حکام کے تصرف کی مذمت کرتے ہوئے اس رویے کو داعش جیسی شدت پسند تنظیموں کے برتاؤ کے مترادف قرار دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں