.

نیتن یاھو کا لبنان کے اندر حزب اللہ کے ٹھکانوں پرحملے کا عندیہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو نے ایران نواز لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کو لبنان کے اندر حملوں کا نشانہ بنانے کا عندیہ دیا ہے۔ ان کا کہناہے کہ ایران کو جوہری ہتھیار بنانے اور شام میں اپنے اڈے قائم کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق کابینہ کے اجلاس سے خطاب میں اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو نے ایران کی خطے میں بڑھتی سرگرمیوں پر شدید نکتہ چینی کی۔ انہوں نے کا کہ ایران شام کو اپنا اڈہ بنا رہا ہے مگر اسے ایسا کرنےکی اجازت نہیں دی جائے گی۔

نیتن یاھو نے کہا کہ ایران لبنانی شیعہ ملیشیا حزب اللہ کو بھی اپنے مہلک ہتھیار پہنچا رہا ہے۔ اگرہم نےخطرہ محسوس کیا تو حزب اللہ کے لبنان کے اندر گہرائی میں موجود ٹھکانوں کو بھی نشانہ بنایا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ ایران لبانن مں اپنے عسکری سرگرمیوں کو فروغ دے رہا ہے۔اگر ایران نے لبنان میں حزب اللہ کی معاونت سے میزائل سازی کی فیکٹریاں قائم کیں تو انہیں تبا کردیا جائے گا۔

مبصرین کا کہنا ہے کہ اسرائیل لبنانی شیعہ ملیشیا حزب للہ کے لبنان کے اندر ٹھکانوں پر بمباری سے اس لیے گریز کررہا ہے کہ اسے خدشہ ہے کہ لبنان کے اندر کارروائی کی صورت میں حزب اللہ جوابی کارروائی میں ہزاروں راکٹ برسا سکتی ہے کیونکہ ایک اندازے کے مطابق حزب اللہ کے پاس ایک لاکھ 30 ہزار میزائل موجود ہیں۔